September 24, 2017
You can use WP menu builder to build menus

ٹوکیو(بی بی سی اپ ڈیٹ)کیا رات کو سونے کی بجائے اسمارٹ فونز پر ایپس استعمال کرنے یا ٹیلیویژن دیکھتے ہوئے وقت گزارتے ہیں ؟ اگر ہاں تو یہ عادت آپ کو ہارٹ اٹیک اور فالج جیسے جان لیوا امراض کا شکار بناسکتی ہے۔یہ انتباہ جاپان میں ہونے والی ایک طبی تحقیق میں سامنے آیا۔تحقیق میں بتایا گیا کہ نیند کی کمی کا امراض قلب اور فالج سے تعلق ہے جو کہ جان لیوا ثابت ہوسکتا ہے۔تحقیق میں بتایا گیا کہ اس عادت کے نتیجے میں دل کی شریانیں سکڑنے لگتی ہیں جس کے نتیجے میں دل کے پٹھوں کو آکسیجن اور خون کی کمی کا سامنا ہوتا ہے جو کہ ہارٹ اٹیک کا خطرہ بڑھاتا ہے۔تحقیق کے مطابق یہ تو پہلے سے سب جانتے ہیں کہ نیند کی کمی امراض قلب کا باعث بنتی ہے مگر اس کی وجہ کیا ہوتی ہے، اس پر زیادہ روشنی نہیں ڈالی گئی۔محققین کا کہنا تھا کہ بہت کم یا بہت زیادہ سونا، سونے میں مشکلات اور نیند کے معیار کو برقرار رکھنے میں مشکلات یہ سب دل اور دماغ کے لیے خطرے کی گھنٹی ثابت ہوتی ہے۔اس تحقیق کے دوران تیرہ ہزار کے قریب افراد کی نیند کے معمولات کا جائزہ لیا گیا۔نتائج سے معلوم ہوا کہ نیند کا ناقص معیار امراض قلب کا خطرہ 52 فیصد جبکہ فالج کا 48 فیصد تک بڑھا دیتا ہے، ایسا ہی کچھ بہت کم یا زیادہ نیند میں بھی دیکھنے میں آیا۔محققین کے مطابق نتائج سے اس خیال کو تقویت ملتی ہے کہ نیند صحت کے لیے بہت ضروری ہے اور اسے نظرانداز کرنا جان لیوا بھی ثابت ہوسکتا ہے۔اس تحقیق کے نتائج یورپین سوسائٹی آف کارڈیالوجی کانگریس کے دوران پیش کیے گئے۔

No Comments

You must be logged in to post a comment.